عراق، افغانستان و پاکستان میں امریکی جنگی اخراجات ۴۴ کھرب ڈالر سے تجاوز

واشنگٹن، (پی ایس آئی) ایک امریکی اخبار کے مطابق عراق، افغانستان، اور پاکستان میں جاری جنگوں پر امریکی اخراجات 4.4ٹریلین ڈالر سے تجاوز کر گئے۔ جب کہ 6لاکھ افراد ان جنگوں کی وجہ سے ہلاک ہوئے جن میں تین لاکھ 50ہزار افراد براہ راست جنگی کارروائیوں کا شکار ہوئے جب کہ ڈھائی لاکھ ایسے افراد بھی موت کے منہ میں چلے گئے جنہیں ان جنگوں سے پیدا شدہ مسائل کی وجہ غذائی اور صحت کی سہولتوں تک رسائی نہ مل سکیں۔ پاکستان میں 2004سے 52ہزار پاکستانی شہری اس جنگ میں جاں بحق ہوئے جب کہ 50ہزار سے زائد زخمی ہوئے۔ عراق پر جنگی اخراجات 2.1ٹریلین ڈالر جب کہ افغانستان اور پاکستان میں جنگی اخراجات 2.15ٹریلین ڈالر ہوئے۔ امریکہ کو ان جنگوں کے لئے حاصل قرض پر آئندہ 40برس میں 8ٹریلین ڈالر سود ادا کرنا پڑے گا۔ امریکی تھنک ٹینک کے اعداد و شمار کے مطابق ہلاکتوں میں امریکی فوجی، کنٹریکٹرز، امریکی اتحادی فوجی، سیکورٹی فورسز، عسکریت پسند، دہشت گرد اور شہری شامل ہیں۔ ان ہلاکتوں میں 220000شہری، 88024مخالف فورسز،438انسانی خدمات کی تنظیموں کے کارکن، 344صحافی، 6802امریکی فوجی، 787امریکی کنٹریکٹرز، 30499اتحادی پولیس اور 1432اتحادی فوجی شامل ہیں۔عراق میں موجودہ صورت حال میں (ISIS)تنظیم کے مذہبی عسکریت پسندوں نے عراق کے کئی حصوں پر کنٹرول سنبھالنا شروع کر دیا ہے جس سے عراق کے سیاسی مستقبل پر کئی سوالات کھڑے ہو گئے، امریکی یونیورسٹی براؤن کے پروفیسر کیتھرین لٹز کا کہنا ہے کہ عراق میں مزید امریکی فوج کے استعمال کا فیصلہ مالی اور انسانی نقصان کا باعث ہوگا۔

Leave a comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *